درخواست برائے آبادکاری یا دوسری شادی کی اجازت

اگر آپ کی بیوی آپکے ساتھ نہیں رہ ری اور ناراض ہو کر چلی گئی ہے۔ تو آپ یہ درخواست جس یونین کونسل میں آپکا نکاح ہوا تھا یا جہاں آپکی بیگم رہائش پزر ہے وہاں جمع کروائیں۔ آپ اس میں اپنے حالات و واقعات کے مطابق تبدیلی کر سکتے ہیں۔ اس درخواست میں شادی دوسری شادی کا ذکر نہیں ہے۔ کیونکہ اگر آپکی بیوی واپس نہیں آئے گی تو یونین کونسل خود آپکو دوسری شادی کی اجازت دے گی یا پھر آپ سے پوچھے گی کہ اگر آپ دوسری شادی کرنا چاہتے ہیں۔

یہ درخواست وکیل سے مشورہ کے بعد لکھی گئی ہے اور آپ کو بھی کسی نہ کسی وکیل سے مشورہ ضرور کرلینا

چاہیے۔ یہ درخوست انگلش میں بھی موجود ہے۔ لیکن بہتر ہے کہ آپ اسے اردو میں ہی جمع کروائیں۔

چیئرمین ثالثی کونسل

یونین کونسل 79 سمن آباد، لاھور

درخواست برائے آبادکاری

جناب عالی!

گزارش ہے کہ میری شادی 25 ،Dec 2015 کو آپ کی یونین کونسل میں رجسٹرڈ ہے۔ میرا نام (نام ولد نام) اور میری بیوی کا نام( ) ولد (نام) ہے۔

پچھلے سال میری بیوی ۲ سے ۳ دن کا کہ کر اپنے والدین کے گھر گئی اور ساتھ میں تقریبا دو تولہ سونا بھی لے گئی اب کافی عرصہ ہوگیا ہے اور وہ ابھی تک واپس نہیں آئی ہے۔ اور اپنے حقوق زوجیت ادا نہیں کر رہی۔ میری دو بیٹیاں (نام) اور (نام) بھی اس کے پاس ہیں، ان کا گھر اتنا چھوٹا ہے کہ میری بیٹیوں کے رہنے اور سونے کی جگہ بھی نہیں ہے۔ اور میں اپنی بیٹیوں کے لیے ماہانہ خرچہ بھی دے رہا ہوں۔ بارہا گزارش کے باوجود وہ مجھے اپنی بیٹیوں سے بھی ملنے نہیں دے رہے ہیں۔

میں بذات خود، اپنے گھر والوں، اسکی فیملی کے کچھ افراد کی مدد سے ہر ممکن کوشش کر چکا ہوں کہ وہ واپس آجائے اور ساتھ میں عدالت سے بھی رجوع کیا تاکہ اسے واپس لایا جا سکے۔ لیکن ہر کوشش ناکام ہوچکی ہے۔

آپ سے گزارش ہے کہ آپ اس معاملے میں میری مدد کریں تاکہ میرا گھر آباد ہوسکے اور میں اپنے بچوں سے بھی مل سکوں اور میں اپنے گریلو معاملات کو آگے بڑھانے کے ساتھ ساتھ زندگی کا پہیہ چلا سکوں۔ میری عمر پینتیس سال ہے اور عمر کے اس حصے میں بیوی کے بغیر میرا گزارہ ناممکن ہے۔

میں ہمیشہ آپکا شکر گزار رہوں گا۔

نام شناختی کارڈ ۰۰۰۰۰

عارضی پتہ۔

مستقل پتہ۔

فون

اضافی ڈاکومنٹ۔ نکاح نامہ، Conjugal Rights Case Application